نا کافی

ایک لا متناھی تلاش ھے
میں وہ دروازہ تلاش کر رہی ہوں جو بقول رومی میرے اندر ہی ہے
مگر یہ تلاش لاحاصل کیوں ہے اب تک
مجھے وہ نظر نہیں آتا جو میں دیکھنا چاھتی ھوں
کوئ کہتا ہے جتنا ظرف نظر ھوتا ہے بس اتنا ہی دکھتا ہے
کوئ کہتا ہے جتنا چاہو گے اتنا پا بھی لو گے
پھر شاید
میرا ظرف اور میری چاہت کافی نہیں
اس آگ کی حدت اس کی حسرت
شاید اس میں کوئ کمی ہے
تو پھر میرا ہر سجدہ محض ٹکر
ہر آنسو صرف ایک قطرہ
میری چاہت نا مراد
اور ہر دعا بے قرار ہی رہے گی؟

Advertisements

Leave a Comment

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s